اصلاح نفس کے چار اصول ہیں:

1- "مشارطہ"
اپنے نفس کیساتھ"شرط" لگانا کہ"گناہ" نہیں کروں گا-

2- " مراقبہ"
کہ آیا "گناہ" تو نہیں کیا-

3- "محاسبہ"
کہ اپنا حساب کرے کہ کتنے "گناہ"کیے اور کتنی "نیکیاں" کیں-

4- "مواخذه"
کہ"نفس" نے دن میں جو "نافرمانیاں" کیں ھیں اس کو ان کی"سزا" دینا اور وہ سزا یہ ھے کہ اس پر "عبادت" کا بوجھ ڈالے-

(امام غزالی رحمۃ اللہ علیہ ۔۔۔ احیاء علوم الدین)


1)هرصبح نفس کے ساتهہ شرط لگائ جاے کہ آج دن بهر گناه نہیں کروں گا.....
2) دن بهر اپنی نگرانی رهے کہ گناه نہ هوجاے.
3) رات کو سونے سے پہلے تنہائ میں دن بهر کا جائزه لیا جاے کہ کیا غلط هوا اور کیا اچها هوا ......
4) جوغلط هوا اس پر شرمندگی کے ساتهہ استغفار کرلے اور جو اچها کیا اس پر خوب اللہ تعالی شکر کرے.....
یہ حاصل هے اوپر ذکرکئے گے اصلاح نفس کے اصول کا ...اللہ تعالی هم سب کو اپنی اصلاح کی طرف متوجہ فرمادے آمین.

Post A Comment: